Urdu

سندھ ہائی کورٹ نے نیب اور کریمنل کیسز کا سامنا کرنے والے افسران کو عہدوں سے ہٹانے کا حکم دے دیا

کراچی: کرپشن کیسز کا سامنا کرنے والے سرکاری افسران کے خلاف عدالت کا بڑا حکم سامنے آگیا ہے اور سندھ ہائی کورٹ نے نیب اور کریمنل کیسز کا سامنا کرنے والے افسران کو عہدوں سے ہٹانے کا حکم دے دیا ہے عدالت نے قرار دیا ہے کہ ایسے افسران کو سرکاری عہدوں پر رہنے کا کوئی حق نہیں، کرپشن اور کریمنل کرنے والے افسران بری ہونے تک عہدوں پر کام نہیں کرسکتے۔ عدالت نے نیب ذہ افسران عہدوں سے نہ ہٹانے پر چیف سیکرٹری سے وضاحت طلب لی ہے اور پوچھا ہے کہ بتایا جائے، کرپشن کیسز کا سامنے کرنے والے افسران کو عہدوں سے کیوں نہیں ہٹایا گیا۔ عدالت نے آبرزویشن دی کہ کئی افسران کے خلاف محکمہ کارروائی طویل عرصے سے مکمل نہیں ہوئی، ایسی کارروائی کی وجہ سے کئی افسران ترقی سے محروم رہے، عدالت نے کرپٹ افسران کے خلاف محکمہ جاتی کرروائی فوری مکمل کرنے کا حکم بھی دیا اور چیف سیکرٹری کو آئندہ سماعت پر تفصیلی رپورٹ پیش کرنے کا حکم دے دیا۔ عدالت نے چیف سیکرٹری کو 14 جنوری کو رپورٹ پیش کرنے کا حکم دیا؛ عدالت کے مطابق پیش کردہ رپورٹ کے ظاہر ہے کہ نیب ذدہ سرکاری افسران تاحال اپنے عہدوں پر کام رہے ہیں، یاد رہے کہ سندھ کے 500 سے زائد کرپٹ افسران کو عہدوں پر براجمان ہونے کے خلاف ایم کیوایم نے درخواست دائر کی تھی

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button
Close
Close