Urdu

کراچی کریک مرینا فراڈ: سیپا نے بلڈر کو ڈی ایچ اے فیز 8 میں تعمیرات روکنے کا حکم دے دیا

کراچی: سیپا نے بلڈر کو ڈی ایچ اے فیز 8 میں تعمیرات روکنے کا حکم دے دیا،عبد الستار ایدھی ایونیو میں واقع ڈیفنس ہاو¿سنگ اتھارٹی ڈی ایچ اے فیز 8 میں تعمیر ہونے والی عمارت کی تعمیر کو روکنے کے لئے سندھ ماحولیاتی تحفظ ایجنسی (ایس ای پی اے) نے میسرز کریک مرینا بلڈرز اور ڈویلپرز کو انوائرمینٹل پروٹیکشن آرڈر (ای پی او) جاری کیا ہے۔ کراچی ، کیونکہ قانون کے مطابق اپنے لازمی ماحولیاتی اثرات کی تشخیص (ای آئی اے) درج نہ کرنے کی وجہ سے ڈائریکٹر جنرل ایس ای پی اے نعیم احمد مغل نے ای پی او میں نشاندہی کی کہ مضامین عمارت بنانے والے کو اس سے قبل 15/2/21 کو سندھ ماحولیاتی تحفظ ایکٹ -2014 کی عدم تعمیل کا جواب طلب کرنے کے لئے ذاتی سماعت کا موقع فراہم کیا گیا تھااس کے بعد مطلوبہ دستاویزات پیش نہ کرنے پر ، ڈی جی ایس ای پی اے نے کہا ، بلڈر کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ ماحولیاتی منظوری حاصل ہونے تک حوالہ شدہ عمارت کی تعمیر بند کردے،نعیم مغل ڈی جی ایس ای پی اے نے یہ بھی انتباہ کیا ہے کہ ای پی او میں متعین ہدایت کی تعمیل میں ناکامی پر ، مجوزہ کے خلاف متعلقہ عدالت میں قانونی کارروائی کا آغاز کیا جائے گایہ نشاندہی کی جاسکتی ہے کہ سندھ ماحولیاتی تحفظ ایکٹ 2014 کی دفعہ 17 کے تحت کوئی بھی مجوزہ صوبہ سندھ کے دائرہ اختیار میں ترقیاتی منصوبے کا آغاز یا تعمیر نہیں کرے گا جب تک کہ اس کی ماحولیاتی منظوری ای پی اے یا آئی ای ای کو ایس ای پی اے سے حاصل نہیں کرلی جاتی ہے۔جبکہ اسی ایکٹ کے سیکشن 21 کے تحت ڈی جی ایس ای پی اے کو کسی ایسے ترقیاتی منصوبے کی تعمیر یا تنصیب روکنے کا اختیار حاصل ہے جو سندھ ای پی اے کی پہلے منظوری کے بغیر اس کی ای آئی اے یا ابتدائی ماحولیاتی امتحان (آئی ای ای) دائر کرکے شروع کیا گیا تھا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button
Close
Close